مجھ سے اب شریف خاندان کی مزید غلامی نہیں ہوتی؛خواجہ سعد رفیق

12:45 PM 8 may

اسلام آباد (خبر نامہ 92) معروف صحافی علی درانی کا کہنا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ مجھ سے اب شریف خاندان کی مزید غلامی نہیں ہوتی۔سعد رفیق کہتے ہیں کہ میرا گلا ایک لمبی داستان ہے۔اور سعد رفیق کے ویسے بھی جائز نکات ہیں۔جب ن لیگ کی حکومت تھی تو شاہد خاقان عباسی وزیراعظم بنے۔تمام رہنما اپ گریڈ ہو گئے اور میں نے کہا کہ مجھےریلوے میں رہنے کا شوق نہیں ہے مجھے بھی کوئی اچھا محکمہ دیا جائے۔ احسن اقبال وزیر داخلہ تھے،مریم اورنگزیب کے پاس بھی اچھا عہدہ تھا اور مجھے مال گاڑی کے اوپر چڑھا دیا۔اس کے باوجود میں نے الیکشنلڑے اور ایم پی اے بنا،میں نے کہا کہ مجھے پنجاب اسمبلی میں اپوزشین لیڈر بنا دیا جائے لیکن وہ بھی حمزہ شہباز کے حصے میں آیا،پھر میں نے کہا کہ مجھے پارلیمانی لیڈر بنایا جائے تو وہ بھی بنایا گیا اور مجھے کہا گیا کہ ہمایوں اختر کے مقابلے پر الیکشن جیتو میں وہ بھی جیت گیا،پھر میں نے کہا کہ مجھے پی اے سی کا ممبر بنایا جائے اور وہ بھی نہ بنایا گیا۔ نہوں نے شہباز شریف ، نواز شریف جہاں تک کہ مریم نواز سے بھی درخواست کی تاہم ان کی نہ سنی گئی۔اس کے بعد انہوں نے تیس صدور بنائے اور مجھے آخری نمبر پر رکھا۔علی درانی کا مزید کہنا ہے کہ سعد رفیق پارٹی کوک چھوڑیں گے نہیں پارٹی کے اندر ہی رہیں گے۔خیال رہے اس سے قبل ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ کہ ہ پاکستان مسلم لیگ پہلے ہی دھڑے بندی کا شکار تھی جس کے بعد پارٹی کے اہم رہنماؤں نے بھی قیادت سے ناراضگی کا اظہار کر دیا ہے۔

Related Post