1999 کی طرح شریف برادران رات کے اندھیرے میں چلیں جائیں گے،اور ہم جیل میں لرتے مرتے رہے گے،سعد رفیق

5:30 PM 4 may

اسلام آباد (خبر نامہ 92) کچھ روز سے خبریں سامنے آرہی تھی کہ مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد رفیق نے پارٹی قیادت پر ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔تاہم اب قومی اخبار کی ایک رپورٹ میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ خواجہ سعد رفیق نے شریف برادرانکو چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔سعد رفیق گزشتہ دو ماہ سے شریف برادران سے سخت نالاں ہے اور وہ کہتے ہیں کہ 1999ء کی طرحشریف برادران رات کے اندھیرے میں اپنا سامان لے کر بھاگ جائیں گے اور ہم جیل میں لڑتے مرتے رہیں گے مگر اب شریف برادران نے ایسا کیا تو پوری مسلم لیگ ن ان کے خلاف ہو جائے گی۔ خیال رہے اس سے قبل ایک رپورٹ مں بتایا گیا تھا کہ پاکستان مسلم لیگ پہلے ہی دھڑے بندی کا شکار تھی جس کے بعد پارٹی کے اہم رہنماؤں نے بھی قیادت سے ناراضگی کا اظہار کر دیا ہے۔ مسلم لیگ ن کی قیادت کی خاموشی سے پارٹی کے اندر مایوسی اور بے چینی کو مزید ہوا ملی ہے۔ نامکمل تنظیمی ڈھانچہ، شہباز شریف کا دورہ لندن، نواز شریف اور مریم نواز کی عدالتی ریلیف کی صورت میں متوقع لندن روانگی، قومی اور اہم ایشوز کے بارے میں پالیسی سے لاعلمی ایسے عوامل ہیں جن کی وجہ سے پارٹی کے اندر غیر یقینی صورتحال پیدا ہو گئی ہے

Related Post